vosa.tv
Voice of South Asia!

آئی فون 16 ہزار فٹ کی بلندی سے زمین پرگرنے کے بعد بھی کام کرتا رہا

0

اگر آپ کے ہاتھ سے اسمارٹ فون گر جائے تو دل دھڑک سا جاتا ہے اور پھر فوراً فون کو چیک کرتے ہیں کہ کئی اسے کوئی نقصان تو نہیں پہنچا ہے۔6 جنوری کو امریکا کی الاسکا ایئرلائنز کی پرواز کی کھڑکی ٹوٹ گئی جس کے بعد ہنگامی طور پر لینڈنگ کی گئی اور خوش قسمتی سے تمام مسافر محفوظ رہے۔الاسکا ایئرلائنز کی پرواز اے ایس اے 1282 کی کھڑکی ٹوٹ کر 16 ہزار فٹ کی بلندی پر فضا میں اڑ گئی تھی۔طیارہ اوریگن سے کیلیفورنیا جارہا تھا کہ جب اس کی کھڑکی چکنا چوری ہوئی اور اسمارٹ فونز سمیت مختلف اشیا فضا میں اڑ گئیں۔اس میں ایک آئی فون بھی تھا جس کا ماڈل واضح نہیں ہے وہ فون 16 ہزار فٹ کی بلندی سے زمین پر جاگرا۔نیشنل ٹرانسپورٹیشن سیفٹی بورڈ نے تصدیق کی ہے کہ 16 ہزار فٹ کی بلندی سے گرنے کے باوجود یہ اسمارٹ فون درست طریقے سے کام کررہا تھا۔اس اسمارٹ فون کو ایک کیس میں رکھا گیا تھا تاکہ اسے گرنے پر نقصان نہ پہنچے۔سیناتھن بیٹس نامی شخص نے ایکس (ٹوئٹر) پر ایک پوسٹ میں اس فون کی تصاویر شیئر کیں۔انہوں نے ایکس پوسٹ میں کہا کہ انہیں ایک سڑک کے کنارے پر ائیر پلین موڈ پر کام کرنے والا ایک آئی فون ملا ہے جو 16 ہزار فٹ کی بلندی سے گرنے کے باوجود بالکل ٹھیک ہے۔انہوں نے نیشنل ٹرانسپورٹیشن سیفٹی بورڈ سے رابطہ کرکے اس بارے میں بتایا تو بورڈ کا کہنا تھا کہ یہ طیارے سے گرنے والا دوسرا فون ہے جو ملا ہے وہ آئی فون حیران کن طور پر اتنی بلندی سے گر کر بھی بچ گیا۔وہ فون ناصرف فعال تھا بلکہ اس کی 50 فیصد بیٹری بھی باقی تھی جبکہ ایس او ایس موڈ بھی کام کر رہا تھا۔ اس حادثے کے بعد الاسکا ائیر لائنز نے عارضی طور پر تمام بوئنگ 737 میکس 9 طیاروں کا آپریشن معطل کر دیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.