vosa.tv
Voice of South Asia!

اگر میں کامیاب ہوا تو عوام کا  تحفظ کو یقینی بنانا ہماری  اولین ترجیح ہو گی ، ایڈ رومین

0

سفک کاونٹی ری پبلکن پارٹی کے ہیڈ کوارٹر میں  پریس کانفرنس کرتے ہوئے سفک کاونٹی ایگزیکیٹیو کےری پبلکن  امیدوار  ایڈ رومین کا کہنا  تھا  کہ  میں  16 سال تک بطور  کاؤنٹی کلرک  اور11 سال بطور قانون ساز اور بطور سپروائزر کام کرتا رہا ہوں اس لئے میں مقامی حکومت کے بارے میں تھوڑابہت جانتا ہوں۔اسوقت ہمیں جس بڑے مسئلے کا سامنا ہے وہ جرائم کو ختم کرنا اور  اپنی عوام کا تحفظ یقینی بنانا ہے، دوسرا مسئلہ مہنگائی کو کنٹرول کرنا ہے اور چاہتے ہیں کہ لوگوں کے لئے کاونٹی کو سستا کیا جا سکے۔ایڈ رومین نے کہا کہ ہم سب مختلف جگہوں سے آئے تھے۔ ہم تارکین وطن کی قوم ہیں۔ ایک مسئلہ جو آج متنازعہ ہے وہ یہ ہے کہ ہماری سرحدیں کھلی ہیں۔ ہمارے پاس کوئی سوچی سمجھی امیگریشن پالیسی نہیں ہے جہاں لوگ ہمارے ملک میں آسکیں اور پھر معاشرے میں ضم ہو جائیں گے۔ایک سوال کے جواب میں ایڈ رومین نے کہا کہ لوگ باہر نکلیں  اور ووٹ دیں، اگر آپ بیمار ہیں یا شہر سے باہر ہیں  تو ووٹ آن لائن بھی دیا جا سکتا ہے ، آپکو تمام ووٹنگ سائٹس بتا دی جائیں گی، میں سب کو باہر نکلنے اور ووٹ دینے کی ترغیب دوں گا۔ ایڈ رومین نے دوران پریس کانفرنس بتایا کہ لانگ آئی لینڈ  میں مسلمانوں کو  قبرستان کا مسئلہ درپیش ہے ، ہر کسی کو اپنے مردےکو دفنانے کا حق ہونا چاہیے، ہم اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے بھی کام کر رہے ہیں۔اگر میں یہ الیکشن جیت گیا تو میرے پاس حکومت بنانے کے لیے 40 دن ہوں گے، ہمارے شہر میں ڈیڑھ ملین لوگ ہیں۔ یہ کاؤنٹی کی آبادی کا ایک تہائی ہے۔ اورہمیں حکومت چلانے میں مدد کے لیے اہل افراد کی ضرورت ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران  صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے سفک کاونٹی کے ڈسڑکٹ اٹارنی  رے ٹرنی کا کہنا تھا کہ میں Suffolk کاؤنٹی کے تمام شہریوں کی حفاظت کا پابند ہوں۔ ہماری وفاقی امیگریشن پالیسی متضاد اور غیر موثر ہے۔ پاکستانی کمیونٹی کی سماجی شخصیت  راجہ حسن کا پریس کانفرنس کے موقع پر کہنا تھا کہ اور ہم 7 نومبر کوسفولک کاؤنٹی ایگزیکٹو کے ری پبلکن امیدوار ایڈ رومین  کی حمایت کے منتظر رہیں گے ،راجہ حسن نے صحافیوں کو بتایا  کہ ہمارا ضلع لانگ آئی لینڈاورسفک کاونٹی  میں سب سے بڑا ضلع ہے۔ایڈ رومین تمام جماعتوں کی آواز ہوں گے، ہم اچھے امریکی ہیں، ہم قانون کی پاسداری کرنے والے شہری ہیں ہم محنتی ہیں. اور اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنی کمیونٹی کو اس موڑ سے اگلی سطح پر لے جائیں، جہاں ہم سیاسی عمل میں شامل ہوتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.